’’اسے کہتے ہیں جیت کر ہارنا اور ہار کر جیتنا‘‘مانیں یا نہ مانیں یوسف رضا گیلانی کیساتھ دھوکہ ہوا ، حامد میر کا حیران کن انکشاف

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )صادق سنجرانی ایک مرتبہ پھر چیئرمین سینٹ کا الیکشن جیت گئے ،کامیابی کے بعد انہوں نے اپنے عہدے کا حلف بھی اٹھا لیا، پریذائیڈنگ افسر کے مطابق مدمقابل پی ڈی ایم کے امیدوار یوسف رضا گیلانی کے 7ووٹ مسترد ہوئے ، صادق سنجرانی نے 48ووٹ حاصل کئےجبکہ یوسف رضا گیلانی نے 42ووٹ حاصل کئے ، نتیجہ کا اعلان ہوتے ہی سب نے صادق سنجرانی کو مبارکباد دی ۔ اس حوالے سے سینئر اینکر پرسن حامد میرکا کہنا تھا کہ ’’اسے کہتے ہیں جیت کر ہارنا اور ہار کر جیتنا‘ ‘ جو لوگ صادق سنجرانی کی فتح

کا جشن منا رہے ہیں انہیں فتح مبارک ہو ۔ تفصیلات کے مطابق سینئر تجزیہ کار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں لکھا ہے کہ جو لوگ صادق سنجرانی کی فتح کا جشن منا رہے ہیں انہیں فتح مبارک ہو لیکن وہ یاد رکھیں کہ سینیٹ میں پی ڈی ایم کی اکثریت ثابت ہو گئی ہے ، انکا کہنا تھا کہ انکے 49 ووٹ ہیں حکومت 42 ووٹوں کے ساتھ قانون کیسے منظور کرائے گی؟اب ہر قانون پر پھڈا ہو گا اور سیاست میں کشیدگی مزید بڑھے گی۔حامد میر کا مزید کہنا تھا کہ حفیظ شیخ کے بھی سات ووٹ مسترد ہوئے تھے گیلانی کے بھی سات ووٹ مسترد ۔۔۔ حساب برابر کر دیا گیا سنجرانی کے 48 ووٹ نکلے اور گیلانی کے 42 ووٹ نکلے لیکن خفیہ کیمروں کی کہانی ابھی ختم نہیں ہوئی ،مانیں یا نہ مانیں پی ڈی ایم کے سات ووٹروں نے یوسف رضا گیلانی کے ساتھ دھوکہ کیا۔

Related Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *