عدالت کا بڑا فیصلہ، کتا مار مہم کی نگرانی نہ کرنے پر فریال تالپور اور گیان چندایسرانی کو معطل کردیا

سکھر(این این آئی)سندھ ہائی کورٹ کا بڑا فیصلہ سامنے آگیا،کتا مار مہم کی نگرانی نہ کرنے پر رتوڈیرو اور جامشورو کے ایم پی ایز فریال تالپور اور گیان چندایسرانی کو معطل کردیا،الیکشن کمیشن کو نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم، جس علاقے میں سگ گزیدگی کا واقعہ پیش آیا وہاں کے ایم پی اے کے خلاف کاروائی ہوگی،عدالت کاانتباہ،تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ سکھر بینچ نے صوبے میں بڑھتے ہوئے کتیکیکاٹنے کے بڑھتے واقعات کے حوالے سے داخل آئینی پٹیشن کے حوالے سے تحریری احکامات جاری کردییے ہیں اور رتودیرو و جامشورو سے تعلق رکھنے والے ایم پی ایز فریال

تالپور اور گیانچند ایسرانی کو معطل کردیا ہے عدالت عالیہ نے حکم میں یہ انتباہ دیا ہے کہ اگر اب کسی علاقے میں کتے کے کاٹنے کا واقعہ پیش آیا تو اس علاقہ کا ایم پی اے اس کا ذمہ دار ہوگا اور اس کے خلاف بھی کاروائی عمل میں لائی جاسکتی ہے عدالت نے اپنے حکم میں یہ بھی کہا ہے کہ ایم پی ایز اپنے حلقوں کے عوام کو سہولیات فراہم کرنے میں ناکام رہے ہیں عدالت نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس فیصلے کی کاپی تمام ایم۔پی ایز کو فراہم کی جائے اس ہدایت کے ساتھ کہ اگر انہوں نے عدالتی احکامات پر عمل نہ کیا تو یہ کاروائی ان کے ساتھ بھی ہوسکتی ہے عدالت عالیہ نے سیکریٹری صحت پر بھی برہمی کا اظہار کیا ہے کہ رتودیرو اور جامشورو میں بچوں کے چہروں پرکتوں کے کاٹنے کے واقعات پیش آئے ہیں مگر انہوں نے اس طرح کہ کوئی رپورٹ پیش نہیں کی ہیں وہ سندھ کی اسپتالوں میں موجود اینٹی ریبز ویسکین کی موجودگی کے حوالے سے بھی رپورٹ عدالت کو پیش کریں عدالت عالیہ کا حکم میں یہبھی کہنا ہے کہ عدالت عالیہ نے اپنی سابقہ سماعتوں پر ایم۔پی ایز کو کتا مار مہم کی نگرانی کرنے کے احکامات دیئے مگر انہوں نے اسے سنجیدگی سے نہیں لیا عدالت عالیہ نے اپنے حکم می صوبائی الیکشن کمیشن کو مذکورہ دونوں ارکان اسمبلی کی معطلی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *