وفاقی وزیر زرتاج گل کی لائیو پروگرام میں طبیعت بگڑ گئی پروگرام ادھورا چھوڑ کر چلی گئیں ، اینکر کو ایمرجنسی بریک لینا پڑ گئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، آن لائن)نجی ٹی وی پروگرام میں پی ٹی آئی کی خاتون رہنما اور وفاقی وزیرزرتاج گل کو مریم نواز کی نیب کورٹ پیشی کے حوالے سے گفتگو کرنے کے لیے دعوت دی گئی تھی۔ پروگرام میں کورونا کی حالیہ لہر اور نیب کے موضوع پر گفتگو کی جا رہی تھی کہ وفاقی وزیر کی طبیعت اچانک خراب ہو گئی۔پروگرام میںن لیگ کے راہنما ڈاکٹر طارق فضل بھی شریک گفتگو تھے۔تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی پروگرام میں کرونا کی بڑھتی لہر پر وفاقی وزیر زرتاج گل نے بات کرتے ہوئے کہاکہ حکومت اپنے تئیں کوشش کررہی ہے

اور لاک ڈائون میں بھی مزید سختیاں کی جا رہی ہیں تاہم یہ لوگوں کی اپنی ذمہ داری بھی ہے کہ وہ احتیاط کریں۔جبکہ مریم نواز کی نیب پیشی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے پہلے بھی نیب پر جتھے لے جا کر چڑھائی کی تھی اور اب بھی وہ کچھ ایسا ہی کرنے جا رہی ہیں تاہم نیب آزاد اور خود مختار ہے اور وہ احتساب کا عمل جاری رکھے گا۔اسی موضوع پر ڈاکٹر طارق فضل چوہدری گفتگو کر رہے تھے تو زرتاج گل نے درمیان میں مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ میری طبیعت ٹھیک نہیں ہے جس پر پروگرام کے اینکر عمران خان نے انہیں کہا کہ محترمہ آپ کیا کہنا چاہ رہی ہیں۔جس پر لائیو پروگرام میں زرتاج گل نے کہا کہ مجھے سخت ترین میگرین اسٹارٹ ہو گئی ہے اور میں آپ کے پروگرام میں مزید نہیں بات کرسکتی ،ہو سکتا ہے تو مجھے اجازت دیجیے۔جس پر پروگرام اینکر عمران خان نے کہا کہ آپ آرام کریں اور اگر آپ کی طبیعت سنبھل جائے تو دوبارہ پروگرام میں شرکت کر لیجیے گا۔اس کے بعد عمران خان نے نے کہا کہ وفاقی وزیر کی طبیعت خراب ہونے پر انہیں پروگرام سے جاناپڑگیا ہے لہذا ہم بریک لے لیتے ہیں اور ا سکے بعد کوشش کرتے ہیں کہ کسی اور حکومتی ترجمان کو پروگرام میں دعوت دے سکیں۔تاہم بریک کے بعد وفاقی وزیر فواد چودھری نے پروگرام میں شرکت کی۔دوسری جانب کورونا وبا نے مزید 72 افراد کی جان لے لی ہے جب کہ ملک بھر میںمزید 3270 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق ملک بھر میں کورونا کی تشخیص کے لیے گزشتہ روز 39 ہزار 742 ٹیسٹ کئے گئے ، اس طرح اب تک ملک میں اس وبا کی تشخیص کے لیے کئے گئے ٹیسٹس کی مجموعی تعداد 98 لاکھ 57 ہزار 233 ہوگئی ہے۔گزشتہ روز ملک بھر میں کورونا کے مزید 3 ہزار 270 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ کورونا کی تیسری لہر نے پنجاب اور اسلام آباد کو سب سے زیادہ متاثر کیا ہے۔ پنجاب میں مصدقہ مریضوں کی تعداد 2 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سندھ میں کورونا کےمصدقہ مریضوں کی تعداد 2 لاکھ 63 ہزار 464، پنجاب میں 2 لاکھ 969، خیبر پختونخوا 80 ہزار 519،بلوچستان 19 ہزار 347، اسلام آباد میں 52 ہزار 676، آزاد کشمیر میں 11 ہزار 792 اور گلگت بلتستان میں 4 ہزار 974 ہوچکی ہے۔کورونا نے ملک میں مزید 72 افرادکی زندگیوں کے چراغ گل کردیئے ہیں، جس کے بعد اس وبا سے ملک میں 13 ہزار 935 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔کورونا سے سب سے زیادہ جانی نقصان پنجاب میں ہوا ہے جہاں 6 ہزار 39 افراد اس وبا سے جان کی بازی ہار چکے ہیں،اس کے علاوہ سندھ میں 4 ہزار 479،خیبر پختونخوا 2 ہزار 225، اسلام آباد میں 548، گلگت بلتستان میں 103، بلوچستان میں 203 اور آزاد کشمیر میں 338 افراد اس وائرس کی زد میں آکر لقمہ اجل بن چکے ہیں۔گزشتہ روز ملک بھر میں کورونا کے ایک ہزار 733 مریضوں نے اس وبا کو شکست دے دی ہے، اس کے بعد اب اس وائرس سے صحتیاب ہونے والوں کی مصدقہ تعداد 5 لاکھ 85 ہزار 271 ہوگئی ہے۔ ملک بھر میں کورونا کے فعال کیسز کی تعداد 34 ہزار 535 ہے جن میں سے 2 ہزار 485 کی حالت تشویشناک ہے۔

موضوعات:

ہمیں رک کر سوچنا ہو گا

ڈاکٹر حافظ عبدالکریم ڈیرہ غازی خان سے تعلق رکھتے ہیں‘ مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے جنرل سیکرٹری ہیں‘ یہ 2013ءمیں ن لیگ کے ٹکٹ پر ایم این اے بنے‘ شاہد خاقان عباسی کی کابینہ میں مواصلات کے وفاقی وزیر رہے اور 2018ءمیں پاکستان مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر سینیٹر منتخب ہو گئے۔حافظ عبدالکریم نے 11مارچ کو ….مزید پڑھئے‎

ڈاکٹر حافظ عبدالکریم ڈیرہ غازی خان سے تعلق رکھتے ہیں‘ مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے جنرل سیکرٹری ہیں‘ یہ 2013ءمیں ن لیگ کے ٹکٹ پر ایم این اے بنے‘ شاہد خاقان عباسی کی کابینہ میں مواصلات کے وفاقی وزیر رہے اور 2018ءمیں پاکستان مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر سینیٹر منتخب ہو گئے۔حافظ عبدالکریم نے 11مارچ کو ….مزید پڑھئے‎

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *