احتجاج سے ملک بھر میں ٹریفک کا نظام درہم برہم اہم شاہراہیں بند

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مذہبی جماعت کے احتجاج کی وجہ سے مختلف شہروں میں دوسرے روز بھی ٹریفک نظام درہم برہم ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق پنجاب کے بعض شہروں میں سڑکیں ٹریفک کے لیے بند ہیں جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ لاہور، راولپنڈی، کراچی اور دیگر شہروں میں بھی اہم شاہراہیں بند ہیں، کچھ شہروں میں ٹریفکجزوی بحال کر دی گئی، بیشتر میں حالات بدستور خراب ہیں۔لاہور میں چونگی امرسدھو، فیروزپور روڈ، قصور روڈ، یتیم خانہ چوک، شاہدرہ، درواغہ والا، بیگم کوٹ، امامیہ کالونی، سکیم موڑ میں تاحال مظاہرین سڑکوں پر ہیں، لوگوں کو سڑکوں کی بندش سے

مشکلات کا سامنا ہے۔ کراچی، حیدر آباد، پشاور سمیت دیگر شہروں میں بھی احتجاج کے باعث سڑکوں پر ٹریفک کی روانی متاثر ہے۔اسلام آباد اور راولپنڈی کے داخلی اور خارجی راستوں پر بھی ٹریفک کا نظام درہم برہم ہے۔دوسری جانب ٹریفک پولیس کے مطابق بلاک راستوں کے مقامات سے متبادل راستے فراہم کیے جارہے ہیں ،شہر اقتدار میں امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے کے لیے رینجرز کے دستے تعینات کر دیئے گئے۔دوسری جانب راولپنڈی میں مظاہرین کمیٹی چوک کے پاس جمع ہوئے اور ان کی جانب سے پتھراؤ بھی کیا گیا ، مری روڈ پر بھی مظاہرے کی وجہ سے ٹریفک جام رہا ،  کارکنان کی نعرے بازی بھی جاری رہی۔مذہبی جماعت کے کارکنان لیاقتباغ میٹرو بس اسٹیشن پر چڑھ گئے اور شہر بھر میں ٹریفک بلاک کردیا ہے۔اس کے ساتھ ہی مظاہرین نے زبردستی گاڑیاں بھی روکنا شروع کیں اور شہریوں سے تلخ کلامی بھی کی۔اسلام آباد میں بھارہ کہو میں احتجاج جاری رہا جس کے باعث اٹھال چوک بند کردیا گیا ہے، اٹھال چوک بندہونے سے مری سے آنے والی ٹریفک مکمل طور پر جام ہوگئی ہے۔ملتان میں بھی ٹی ایل پی کارکنوں کی جانب سے بہاولپور بائی پاس پر احتجاج جاری ہے جس کے باعث گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ۔مذہبی جماعت کے احتجاج کے باعث ملتان شہر کا جنوبی پنجاب کے مختلف شہروں سے زمینی راستہ منقطع ہوگیا۔علاوہ ازیں بستی ملوک، اڈا لاڑ، خانیوال سمیت دیگر علاقوں میں مذہبی جماعت کے کارکنوں کی جانب سے بھی احتجاج جاری ہے۔

Related Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *