گناہ گار شخص کی کہانی














ایک شخص بہت گناہ گار تھا ہر وقت گناہوں میں رہتا تھا وہ بہت دفعہ توبہ کرنا لیکن پھر گناہ کر جاتا، اسے لگنے لگا شاید اس کی توبہ کبھی قبول ہی نہیں ہوتی ہے۔ اتفاق سے ایک بار اس شخص کا ملنا رابعہ بصری سے ہوا تو اس نے پوچھا: کہ کیا گنہگار کی توبہ قبول ہو سکتی ہے۔ تو رابعہ بصری نے فرمایا انسان اس وقت تک توبہ کر ہی نہیں سکتا جب تک اللہ پاک توفیق نہ دے اور جب توفیق مل جائے پھر قبولیت میں کوئی شک نہیں رہتا۔

کوئی کتنا بھی گناہگار کیوں نہ ہو، اللہ پاک اس کے لیے دعا کا راستہ کبھی بند نہیں کرتا، وہ اپنے بندے کو نوازنے سے نہیں رکتا، جو اللہ اپنے بجائے کسی دوسرے کو خدا بنا کر پوجنے والے پر بھی رحمتیں بند نہیں کرتا، وہ اپنے نام لیوا کے لیے دعا اور توبہ کا رستہ کیسے بند کر سکتا ہے؟ اس لیے اپنی چھوٹی بڑی غلطیوں پر اپنے رب سے توبہ کرتے رہو اور دعا مانگنا نہ چھوڑو۔ اللہ پاک سب کی مدد فرمائے۔آمین










Leave a Comment